بالوں کو جلد سفید ہونے سے بچانے میں مددگار طریقے۔

Noor Health Life

    اگر نوجوانی میں ہی بال سفید ہونے کا سامنا ہونے پر لگتا ہے کہ ایسا صرف آپ کے ساتھ ہی ہورہا ہے، تو آپ غلط ہیں۔

    قبل از وقت بالوں میں سفیدی کا ظاہر ہونا بہت عام ہوتا ہے اور یقیناً بیشتر افراد کو یہ بالکل اچھا نہیں لگتا۔

    کئی بار تو یہ کسی بیماری کی نشانی بھی ہوسکتی ہے۔

    مگر اچھی خبر یہ ہے کہ مخصوص غذائیں اور علاج سے بالوں کی سفیدی کی روک تھام کی جاسککتی ہے۔

    ایسے ہی قدرتی طریقوں کے بارے میں جانیں جو بالوں میں سفیدی کو عرصے تک روکنے اس کا علاج ثابت ہوسکتے ہیں۔

    آملہ

    آملے کے جوس کا ایک گلاس روزانہ پینے کے متعدد فوائد بتائے جاتے ہیں، وٹامن سی اور اینٹی آکسائیڈنٹس سے بھرپور ہونے کی وجہ سے یہ پھل جسم میں گردش کرنے والے ان فری ریڈیکلز کے خلاف مزاحمت کرتا ہے جو بالوں کو نقصان پہنچا کر ان میں سفیدی کا باعث بن سکتے ہیں۔

    آملہ کے تیل کو براہ راست بالوں پر لگا کر انہیں مضبوط اور نشوونما کو بہتر کیا جاسکتا ہے جبکہ بالوں کی رنگتت کو بھی مستحکم کیا جاسکتا ہے۔

    کڑی پتہ

    کڑی پتے بھی قبل از وقت بالوں کی سفیدی کی روک تھام کا ایک بہترین ذریعہ ہے کیونکہ اس میں موجود اینٹی آکسائیڈنٹس اور آئرن کے ساتھ ساتھ وٹامنز اور منرلز اس حوالے سے مددگار ثابت ہوتے ہیں۔

    تحقیقی رپورٹس میں دریافت کیا گیا ہے کہ آئرن کی کمی بالوں کی قبل از وقت سفیدی کی ایک بڑی وجہ ہے۔

    کڑی پتے کے ایکسٹریکٹ کو ناریل کے تیل میں ملا کر بالوں پر لگایا جاسکتا ہے یا کچھ پتوں کو پیس کر ایک سفوف بنائے اور اسے ناریل کے تیل میں شامل کرکے لگالیں۔

    قدرتی سپلیمنٹس

    کئی بار بالوں کی سفیدی جسم میں مخصوص غذائی اجزا کی کمی کا نتیجہ ہوتی ہے، وٹامن بی 12، بی 7، بی 9 اور ڈی 3 کی سطح میں کمی سے بالوں میں قبل از وقت سفیدی نمودار ہوجاتی ہے۔

    ایک تحقیق میں دریافت کیا گیا کہ ان اجزا کی مناسب مقدار کا استعمال بالوں کو لمبے عرصے تک جوان اور صحت مند رکھ سکتا ہے۔

    کیٹالیز سے بھرپور غذائیں

    شکرقندی، گاجر، سرخ شملہ مرچ اور مشرومز چند ایسی غذائیں ہیں جن میں کیٹالیز نامی انزائمے کی مقدار کافی زیادہ ہوتی ہے جو بالوں کی قبل از وقت سفیدی کی روک تھام کرسکتی ہیں۔

    اس کی وجہ یہ ہے کہ یہ انزائمے بالوں کی رنگت کو تحفظ فراہم کرتا ہے، اوپر درج غذاؤں کا استعمال معمول بنانا بالوں کو جلد سفید ہونے سے بچاسکتا ہے۔

    سبز چائے

    اینٹی آکسائیڈنٹس سے بھرپور یہ مشروب بالوں کی نگہداشت کے لیے بھی مفید ہے، کیونکہ اینٹی آکسائیڈنٹس سورج کی روشنی اور فضائی آلودگی سے جسم میں گردش کرنے والے مضر اجزا کے خلاف ڈھال کا کام کرتے ہیں۔

    سبز چائے میں مختلف اجزا اور مرکبات ہوتے ہیں جو بالوں پر مرتب ہونے والے مضر اثرات کی روک تھام کرسکتے ہیں۔

    اس کے علاوہ سبز چائے کے ایکسٹریکٹس کو بطور شیمپو یا تیل کے بالوں کو لگانا ان کو مضبوط بنانے کے ساتھ قبل از وقت سفیدی کی روک تھام بھی کرتا ہے۔

    ڈارک چاکلیٹ

    کاپر سے بھرپور غذائیں بھی قبل از وقت سفیدی کی روک تھام کے لیے بہت مددگار ثابت ہوتی ہیں۔

    یہی وجہ ہے کہ ڈارک چاکلیٹ اس حوالے سے مددگار ثابت ہوتی ہے کیونکہ اس میں کاپر کی مقدار کافی زیادہ ہوتی ہے،کاپر بالوں کی درتی رنگت کو برقرار رکھنے میں بہت اہم کردار ادا کرتا ہے۔

    بادام کا تیل

    بادام وٹامن ای اے اور اے سے بھرپور گری ہے، یہ دونوں اجزا بالوں کیے لیے بہت اہم ہوتے ہیں۔

    نہانے کے بعد بادام کے تیل کی کچھ مقدار سے سر کی مالش معمول بنانا بالوں کو سفید بنانے کے عمل سے ممکنہ تحفظ فراہم کرسکتا ہے، جبکہ اس سے بال مضبوط بھی ہوتے ہیں                                                                                                                                                                     کمزور اور بے جان بالوں کی 8 بڑی وجوہات۔

    آج کل چاہے نوجوان لڑکے لڑلیاں، خواتین ہوں یا مرد حضرات سب کا پیچیدہ ترین مسئلہ بالوں کا کمزور، پتلا اور بے جان ہونا ہے اور وہ اس کے حل کے لیے بے شمار جتن کرتے ہیں۔

    ماہرین غذائیت کے مطابق جیسے صحت مند غذا سے جسم نشونما پاتا ہے ویسے ہی گھنے چمکدار بالوں کا تعلق بھی اچھی غذا سے ہوتا ہے۔

    اس صورت میں ضرورت ہے کہ بالوں کے پتلا ہونے کی بنیادی وجوہات پر غور کیا جائے۔

    بالوں میں تیزی سےکنگا کرنا:

    بالوں میں شیمپو کیا جائے یا کنگا دونوں ہی صورت میں بالوں پر نرمی اور آہستگی سے ہاتھ پھیرنا چاہیے بالکل جیسے مساج کیا جاتا ہے ۔

    بالوں میں شیمپو کیا جائے یا کنگا دونوں ہی صورت میں بالوں پر نرمی اور آہستگی سے ہاتھ پھیرنا چاہیے بالکل جیسے مساج کیا جاتا ہے۔بال جلد کی طرح حساس ہوتے ہیں کنگی کی سختی سے پتلے اور ٹوٹنا شروع ہوجاتے ہیں۔

    بار بار شیمپو کرنا:

    اگر بالوں میں تیل نہ لگایا جائے اور خشک بالوں پر بار بار شیمپو کیا جائے تو بال پتلے ہونا شروع ہوجاتے ہیں ساتھ ہی ان کی چمک بھی متاثر کرتی ہے۔

    صحت مند غذا نہ لینا:

    ماہرین غذائیت کے مطابق بالوں کو وافر مقدار میں پروٹین ساتھ ہی آئرن وٹامن ڈی اور زنک کی ضرورت ہوتی ہے۔

    اگر صحت مند غذا بروقت نہ لی جائے تو بالوں کو گھنا کرنے کے لیے جتنے بھی ٹوٹکے اور جتن کرلیے جائیں سب ناکام ہو جاتے ہیں۔

    بالوں کے خوبصورت گھنے اور چمکدار ہونے کا انحصار بنیادی طور پر صحت مند غذا میں ہے ایسی صورت میں انڈے، دودھ اور مچھلی کا استعمال موثر ہے۔

    ناشتہ ترک کرنا:

    اکثر افراد صبح ناشتہ ترک کردیتے ہیں جس کی وجہ سے پورے جسم کے ساتھ بال بھی متاثر ہوتے ہیں۔ اس لیے اگر آپ اپنے بالوں کو صحت مند رکھنا چاہتے ہیں تو ناشتہ کا خاص خیال رکھیں۔

    بالوں کو بہت زیادہ آئرن کرنا:

    آج کل نت نئے اسٹائل کے بال بنانے کے لیے آئرن راڈ یا اسٹریٹنرز کا استعمال زیادہ کیا جاتا ہے جس کی گرمائش بالوں کو نقصان پہنچاتی ہے۔

    بالوں کو نہ تراشنا:

    بالوں کی لمبائی بڑھانے کے لیے ضروری ہے کہ ہر دو ماہ بعد 1 سے آدھا انچ تک ان کی کٹائی کی جائے لیکن اکثر افراد بال لمبے کرنے کے لیے اس کو نہیں کاٹتے ہیں۔

    نور ہیلتھ زندگی کے مطابق ہر دو ماہ بعد بالوں کو ایک انچ کاٹنا ایسا ہے جیسے دھول مٹی صاف کی جاتی ہے اور اگر نوکیلے بال نہیں کاٹے جائیں تو بال کمزرو اور ٹوٹنے لگتے ہیں۔

    دماغی دباؤ:

    بالوں کا پتلا ہونے کی ایک اہم وجہ تناؤ اور دباؤ کا شکار بھی ہوتا ہے۔ ڈپریشن دماغ میں ہارمون کورٹیسول لیول بڑھا دیتا ہے جس کی وجہ سے بال جھڑنا شروع ہوجاتے ہیں۔

    اس کے لیے بہترین حل ہے کہ ورزش اور دیگر دلچسپی کی سرگرمیوں پر زیادہ توجہ دیں تاکہ دماغی دباؤ سے بچا جاسکے اور صحت بھی متاثر نہ ہو۔

    سگریٹ نوشی:

    سگریٹ نوشی سے نہ صرف معدہ، نظام انحضام اور جسمانی قوت متاثر ہوتی ہے بلکہ بالوں کو بھی نقصان پہنچتا ہے۔

    سگریٹ نوشی سے آکزیڈیٹو اسٹریس بڑھتا ہے جو کہ فوری طور پر خون کی گردش کو روک دیتا ہے جس سے بال بڑھنے کا عمل رک جاتا ہے اور ان کی خوبصورتی متاثر ہوتی ہے۔ مزید سوالات اور جوابات کے لیے نور ہیلتھ زندگی کے ساتھ ای میل اور واٹس ایپ نمبر پر رابطہ کر سکتے ہیں۔ noormedlife@gmail.com

Leave a Comment

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s